اپ ڈیٹ: 20 July 2018 - 23:35
امریکی ایف بی آئی کی ٹیم نے صدر ٹرمپ کے ذاتی وکیل کے دفتر اور گھر پر چھاپہ مار کر اہم دستاویزات اور ریکارڈ کو اپنے قبضے میں لے لیا جس کے بعد انتخابات میں روس سے ساز باز کرلینے کے معاملے سے جنسی اسکینڈل تک ٹرمپ کے معاملات نئے مرحلے میں داخل ہو گئے-
خبر کا کوڈ: ۱۱۲۶
تاریخ اشاعت: 23:52 - April 10, 2018

ٹرمپ کے ذاتی وکیل کے دفتر اور گھر پر ایف بی آئی کا چھاپہمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی بین الاقوامی رپورٹر رپورٹ کے مطابق، ایف بی آئی کی ٹیم نے اسپیشل کونسل رابرٹ مولر کی سربراہی میں ٹرمپ کے ذاتی وکیل مائیکل کوہن کے دفتر اور گھر پر چھاپہ مارا اور اہم ریکارڈ کو اپنے قبضے میں لے لیا-

ایف بی آئی کی ٹیم نے پورن اسٹار ڈینیلز کے ساتھ ماضی میں ٹرمپ کے جنسی تعلقات کے بارے میں  اسے انتخابات کے دوران خاموش رہنے کے عوض دی گئی رقم سے متعلق دستاویزات بھی ضبط کر لی ہیں-

پورن اسٹار ڈینیلز نے اعلان کیا تھا کہ ماضی میں اس کے اور ٹرمپ کے درمیان جنسی تعلقات تھے اور گذشتہ صدارتی انتخابات سے قبل ان تعلقات کے بارے میں کچھ نہ بولنے کے عوض اسے ایک لاکھ تیس ہزار ڈالر کی رقم دی گئی تھی- ٹرمپ کے ذاتی وکیل ما‏ئیکل کوہن نے بھی اعتراف کیا ہے کہ اس نے پورن اسٹار ڈینیلز کو رقم دی ہے تاکہ وہ صدارتی انتخابات کے دوران ٹرمپ کے ساتھ اپنے جنسی تعلقات کا راز فاش نہ کرے-

دوسری جانب ٹرمپ نے اپنے ذاتی وکیل کے دفتر اور گھر پر چھاپے پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کے وکیل کے دفتر اور گھر پر چھاپہ ملک پر حملہ ہے اور یہ شرمناک حرکت ہے۔

پیغام کا اختتام/ 

آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں