اپ ڈیٹ: 21 August 2018 - 06:16
امریکہ دوسرے ممالک کی جانب سے ممنوعہ اور جدید قسم کے ہتھیار بنانے اور رکھنے کی مخالفت کرتا ہے تاہم خود جدید ترین جوہری ہتھیاروں کے درپے ہے۔
خبر کا کوڈ: ۲۴۶
تاریخ اشاعت: 13:55 - February 05, 2018

امریکہ کی جوہری پالیسی اس کی ذہنیت کی عکاسمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی بین الاقوامی رپورٹر رپورٹ کے مطابق امریکی جوہری پالیسی پر ردِعمل کا اظہار کرتے ہوئے چین کی وزارت دفاع کے ترجمان رین گوکیانگ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ امریکی وزارتِ دفاع نے اپنی رپورٹ میں چین کی ترقی اور اس کی جوہری قوت کے خطرے کو بڑھا چڑھا کر پیش کیا جو سراسر الزام اورغلط ہے۔

انھوں نے کہا کہ امریکا سرد جنگ کی ذہنیت سے باہر آئے اور امن مخالف سمت کی جانب بھاگنے کی کوشش نہ کرے۔ ترجمان نے کہا کہ چین نے ہمیشہ جوہری ہتھیاروں کی تیاری میں صبر و تحمل کا مظاہرہ کیا اور اپنی قومی سلامتی کی ضرورت کے حساب سے اپنی صلاحیت کو کم سے کم حد تک محدود رکھا، چین امریکی وزارت دفاع کی جانب سے جاری کی جانے والی نیوکلیئرنظرثانی پالیسی کی سختی کے ساتھ مخالفت کرتا ہے۔

چینی وزارتِ دفاع کے ترجمان رین گوکیانگ کا کہنا تھا کہ دنیا میں طاقتور اور وسیع جوہری اسلحہ خانہ رکھنے والا امریکا سرد جنگ کی ذہنیت سے باہر آئے اور امن کی راہ پر گامزن دنیا کے ساتھ چلے اور اس کی مخالف سمت میں بھاگنے کی کوشش نہ کرے۔ ان کا کہنا تھا کہ امریکی انتظامیہ  اپنی سرد جنگ کی ذہنیت کو پاک کرکے اسلحے کی کمی میں بنیادی ذمہ داری پوری کرے اور چین کی عسکری ضروریات و حالات کو سمجھتے ہوئے ہمارے قومی دفاع اور فوجی ترقی کو غیرجانبداری کی نظر سے دیکھے۔

واضح رہے کہ دو روز قبل امریکی سی آئی اے نے چین کو بڑا خطرہ قرار دیا تھا۔

پیغام کا اختتام/

آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں