اپ ڈیٹ: 17 February 2018 - 20:48
افغان صدر ڈاکٹر اشرف غنی نے دارالحکومت کابل میں حملوں کی تعداد میں بتدریج اضافے کی وجہ سے 2 جرنیلوں سمیت 7 اعلیٰ سطحی فوجی حکام کو معطل اور 164 جرنیلوں کو ریٹائر کر دیا۔
خبر کا کوڈ: ۲۹۳
تاریخ اشاعت: 22:03 - February 09, 2018

افغانستان، 2 جرنیل معطل 164 جرنیل ریٹائرمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی بین الاقوامی رپورٹر رپورٹ کے مطابق صدارتی محل کے ترجمان شاہ حسین مرتضوی نے جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ حالیہ دنوں میں دارالحکومت میں بڑھتے ہوئے حملوں میں اپنے فرائض سے لاپروائی برتنے کی وجہ سے صدر اشرف غنی نے 2 جرنیلوں سمیت کل 7 اعلی فوجی حکام کو معطل کر دیا ہے۔

مرتضوی کا کہنا تھا کہ مذکورہ فوجی حکام کو تفتیش کا سامنا کرنا پڑے گا اور جس نے بھی اپنے فرائض سے لاپرواہی برتی اسے عدالت کے سامنے پیش ہونا پڑے گا۔

 انھوں نے مزید کہا کہ اشرف غنی نے فوج کے شعبے میں نئی اصلاحات کرنے کے لیے 164  جرنیلوں کو ریٹائر بھی کیا ہے۔

واضح رہے کہ افغانستان کے دارالحکومت کابل میں 2  ہفتے قبل وزارت داخلہ کی عمارت کے قریب بم سے مسلح ایمبولینس کے ساتھ کیے گئے خود کش حملے میں 103 افراد جاں بحق اور 250 سے زائد زخمی ہو گئے تھے۔ افغانستان نے حملے کا الزام  پاکستان پر عائد کیا اور پاکستان نے اسے مسترد کر دیا۔

پیغام کا اختتام/

آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں