اپ ڈیٹ: 24 May 2018 - 17:24
ہندوستان کے زیر انتظام ریاست جموں کشمیر کی وزیر اعلی محبوبہ مفتی نے ایک بار پھر مسئلہ کشمیر کےحل کے لئے ہندوستان اور پاکستان کی حکومتوں کے درمیان مذاکرات پر زور دیا ہے۔
خبر کا کوڈ: ۳۰۵
تاریخ اشاعت: 8:34 - February 13, 2018

ہندوستان اور پاکستان کے درمیان مذاکرات پر تاکیدمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی بین الاقوامی رپورٹر رپورٹ کے مطابق ہندوستان کے زیر انتظام ریاست جموں کشمیر کی وزیراعلی محبوبہ مفتی نے ریاستی اسمبلی میں اپنے خطاب کے دوران لائن آف کنٹرول کی دونوں جانب سے فائرنگ کے تبادلے اور ہندوستان کے زیرانتظام جموں و کشمیر میں فوجی کیمپوں پر عسکریت پسندوں کے حملوں پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ امن کا راستہ جنگ سے نہیں بلکہ بات چیت سے ہی نکلے گا-

محبوبہ مفتی نے میڈیا پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ بدقسمتی سے اگر کوئی ہندوستان اور پاکستان کے درمیان  بات چیت کی وکالت کرتا ہے تو اس کو وطن کا مخالف قرار دینے کی کوشش کی جاتی ہے- انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر کے لوگ اس صورتحال سے بری طرح متاثر ہیں اس لئے جنگ نہیں بلکہ بات چیت ہی مسئلے کا حل ہے-

دوسری جانب ریاست جموں و کشمیر کے سابق وزیراعلی فاروق عبداللہ نے پاکستان پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اگر یہی صورتحال جاری رہی تو پاکستان کی مشکلیں مزید بڑھیں گی- انہوں نے یہ بیان ایک ایسے وقت دیا ہے جب پچھلے دنوں ان ہی کی جماعت کے ایک رکن اسمبلی نے ایوان میں مبینہ طور پر پاکستان کے حق میں نعرہ لگایا تھا-

پیغام کا اختتام/

آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں