ایرانی فضائیہ کا پیشرفتہ ٹیکنالوجی پر مشتمل ڈرون تیارکرنے میں سرعت کے ساتھ کام جاری

ایرانی فضائیہ کا پیشرفتہ ٹیکنالوجی پر مشتمل ڈرون تیارکرنے میں سرعت کے ساتھ کام جاریمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی فضائیہ کے سربراہ امیر عزیز نصیر زادہ  نے بھارت کے شہر بنگلور میں فضائی ٹیکنالوجی پر مبنی نمائشگاہ کا دورہ کیا اوراس کے بعد بحر ہند کے ساحلی ممالک کی  فضائیہ کے کمانڈروں کے اجلاس سے خطاب کرتےہوئے کہا ہے کہ ایرانی فضائیہ کا پیشرفتہ ٹیکنالوجی پر مشتمل ڈرون تیارکرنے میں سرعت کے ساتھ کام جاری ہے۔

ایرانی فضائیہ کے سربراہ نے فضائی قدرت اور برتری کی حریت پسندوں ، قومی ہیروز اور دہشت گردی کے خلاف جنگ لڑنے والے اہم کمانڈروں کے خلاف استعمال کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کا  فضائی برتری کا ناجائز فائدہ اٹھاتے ہوئے دوسرے ممالک میں دہشت گردی کے خلاف لڑنے والے قومی ہیروز کو نشانہ بنانا قابل مذمت ہے امریکہ نے شہید میجر جنرل سلیمانی اور ابو مہدی مہندس  کو عراق میں اپنی بربریت کا نشانہ بنایا ، امریکہ نے دہشت گردی کے خلاف عراق اور شام میں جنگ لڑنے والے اہم کامنڈر کو شہید کرکے ثابت کردیا کہ امریکہ خطے میں دہشت گردی کی حمایت کررہا ہے۔ انھوں نے کہا کہ حریت پسند انسانوں اور قومی ہیروز کے خلاف فضائی ٹیکنالوجی کے غلط استعمال کی روک تھام ہونی چاہیے اور اس سلسلے میں عالمی سطح پر کنونشن تشکیل پانا چاہیے تاکہ اس پیشرفتہ ٹیکنالوجی کا کوئی ناجائزہ فائدہ نہ اٹھا سکے۔ انھوں نے کہا کہ ایران نے امریکی پابندیوں کے باوجود فضائی اور دفاعی شعبہ میں خاطر خواہ ترقی اور پیشرفت حاصل کی ہے اور ایران مقامی سطح پر اپنی دفاعی پوزیشن کو مضبوط بنانے کی تلاش و کوشش کررہا ہے۔ انھوں نے کہا کہ ہم ہمسایہ ممالک خاص طور پر بھارت کے ساتھ دفاعی تعلقات کو فروغ دینے کے خواہاں ہیں اور اپنے تجربات کو ایکدوسرے کو دینے کے لئے آمادہ ہیں۔