اپ ڈیٹ: 11 November 2019 - 13:28
فلسطین کی تحریک جہاد اسلامی نے کہا ہے کہ دنیائے عرب امریکی سفارت خانہ تل ابیب سے بیت المقدس منتقل کئے جانے کے خلاف ہے۔
خبر کا کوڈ: ۵۱۹
تاریخ اشاعت: 23:46 - February 27, 2018

بیت المقدس کی محبت مسلمانوں کے دلوں سے نہیں نکالی جا سکتیمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی بین الاقوامی رپورٹر رپورٹ کے مطابق تہران میں تحریک جہاد اسلامی کے نمائندے ناصر ابو شریف نے منگل کو ایک پریس کانفرنس میں یوم نکبہ کے موقع پر امریکی سفارت خانہ بیت المقدس منتقل کئے جانے کے امریکی اور صیہونی حکومت کے فیصلوں کے بارے میں کہا کہ بعض عرب ملکوں کو امریکا کی حمایت کی ضرورت ہے اور وہ امپریالیسٹی منصوبوں پر عمل کر رہے ہیں-

جہاد اسلامی کے نمائندے نے کہا کہ بیشتر عرب ممالک ایسی مشکلات میں پھنسے ہوئے ہیں کہ جنھیں وہ سیاسی طریقے سے حل کر سکتے تھے۔ ان کا کہنا تھا کہ انہی مشکلات اور بحرانوں میں سے ایک، یمن کا بحران ہے کہ جسے یمن کے مختلف گروہ آپسی بات چیت کے ذریعے حل کر سکتے تھے-

تہران میں جہاد اسلامی کے نمائندے نے خبردار کیا کہ یہ تصور اور نظریہ کہ بیت المقدس، عالم اسلام کا سب سے پہلا اور بڑا مسئلہ ہے ایک رات میں لوگوں کے ذہنوں سے محو نہیں ہو سکتا-

ان کا کہنا تھا کہ اگر مغرب چاہتا ہے کہ اس تصور کو مسلمانوں کے ذہنوں سے ختم کردے تو پہلے اسے پوری دنیا کے مسلمانوں کو ختم کرنا ہو گا پھر وہ مسلمانوں کے دلوں سے بیت المقدس کی محبت چھین سکے گا-

  علاقائی اور عالمی مخالفتوں کے باوجود امریکی وزارت خارجہ نے کہا ہے کہ واشنگٹن آئندہ چودہ مئی کو اپنا سفارت خانہ تل ابیب سے بیت المقدس منتقل کرے گا-

چودہ مئی کی تاریخ سرزمین فلسطین پر غاصب اور غیر قانونی صیہونی حکومت کی تاسیس کی تاریخ ہے اور اسی مناسبت سے فلسطینی قوم ہر سال اس دن یوم نکبہ مناتی ہے-

پیغام کا اختتام/ 

آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں