اپ ڈیٹ: 11 November 2019 - 13:28
روس کے صدر ولادی میر پوتن نے کہا ہے کہ ان کا ملک ایران کے ساتھ ہونے والے جامع ایٹمی معاہدے کو باقی رکھے جانے کا خواہاں ہے۔
خبر کا کوڈ: ۱۴۲۸
تاریخ اشاعت: 14:58 - May 15, 2018

روس جامع ایٹمی معاہدے کو باقی رکھنے کا خواہاںمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، جامع ایٹمی معاہدے کے بارے میں ایران اور روس کے وزرائے خارجہ کے درمیان ماسکو میں ہونے والے مذاکرات کے ساتھ ساتھ روس کے صدر ولادی میر پوتن  نےسوچی شہر میں آئی اے ای اے کے سربراہ یوکیا آمانو سے ملاقات اور گفتگو کی ہے۔

روسی وزارت خارجہ کے جاری کردہ بیان کے مطابق صدر ولادی میر پوتن نے یوکیا آمانو کے ساتھ ملاقات میں کہا ہے ماسکو ایٹمی معاہدے کو باقی رکھنے اور اس پر عملدرآمد میں دلچسپی رکھتا ہے-

روس کے صدر نے ایٹمی معاہدے سے امریکہ کی خودسرانہ علیحدگی پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اس عالمی معاہدے کو باقی رکھنے کی اہمیت پر زور دیا۔آئی اے ای اے کے ڈائریکٹرجنرل یوکیا آمانو نے اس موقع پر ایک بار پھر کہا کہ ہمارے معائنہ کاروں کی رپورٹوں کے مطابق ایران ایٹمی معاہدے پر مکمل عملدرآمد کر رہا ہے۔

پیغام کا اختتام/

آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں