اپ ڈیٹ: 11 November 2019 - 13:28
پاکستان میں ان فوجی عدالتوں کو ختم کردیا گیا جو دہشت گردانہ سرگرمیوں میں ملوث عام شہریوں کے خلاف کیس کی سماعت کے لئے قائم کی گئی تھیں۔
خبر کا کوڈ: ۳۷۶۷
تاریخ اشاعت: 16:04 - April 01, 2019

پاکستان میں عام شہریوں کے خلاف کیس کی سماعت کے لئے فوجی عدالتیں ختممقدس دفاع نیوز ایجنسی کی بین الاقوامی رپورٹر رپورٹ کے مطابق، حکومت پاکستان، ان عدالتوں کو جاری رکھنے کے لئے پارلیمنٹ سے منظوری حاصل کرنے میں ناکام رہی ہے جس کے بعد اتوار سے ان عدالتوں کی سرگرمیوں کو روک دیا گیا۔

دسمبر دو ہزار چودہ میں پشاور میں فوج سے متعلق ایک اسکول پر طالبان کے حملے میں ایک سو پچاس افراد جاں بحق اور ایک سو بیس دیگر زخمی ہو گئے تھے۔

اس سانحے کے بعد دو ہزار پندرہ میں پاکستان میں فوجی عدالتیں قائم کر دی گئی تھیں۔ گذشتہ چند برسوں کے دوران ان عدالتوں میں سات سے زائد افراد کے خلاف کیس چلایا گیا جن میں سے تقریبا تین سو افراد کو سزائے موت کا حکم سنایا گیا۔

پیغام کا اختتام/

آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے: